‘میشا شفیع کیس سے معلوم ہوگیا کہ کون دوست ہے اور کون دشمن’

نامور گلوکار و اداکار علی ظفر پر گلوکارہ میشا شفیع نے گزشتہ سال جیمنگ سیشن کے دوران جنسی ہراساں کرنے کا الزام لگاتے ہوئے معاملہ سوشل میڈیا پر اٹھایا تھا، جس کے بعد سے علی ظفر کو سوشل میڈیا پر شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا جبکہ شوبز انڈسٹری سے تعلق رکھنے والی متعدد شخصیات نے بھی علی ظفر کا ساتھ چھوڑ دیا۔ گلوکار و اداکار نے حال ہی میں ‘دی منشی شو’ میں انٹرویو کے دوران میشا شفیع کے ساتھ ہوئے تنازع اور اس کے بعد کیریئر میں آنے والی تبدیلی پر کھل کر بات کی۔ جبکہ انہوں نے اپنی کامیاب فلم ’طیفا ان ٹربل‘ کے سیکوئل اور ایک نئے پروجیکٹ کے حوالے سے بھی کئی انکشافات کیے۔ انٹرویو کے دوران میشا شفیع کی جانب سے لگائے گئے الزامات پر گلوکار کا کہنا تھا کہ وہ اچھی طرح جانتے ہیں کہ ان کے خلاف یہ تنازع کیوں کھڑا کیا گیا، اس کے پیچھے کون تھا اور کس کس نے ان کے خلاف میشا شفیع کا ساتھ دیا۔ علی ظفر کے مطابق وہ تمام ثبوت عدالت میں دے چکے ہیں جبکہ وہ ان دوستوں کے شکر گزار ہیں جو اس مشکل وقت میں بھی ان کا ساتھ دیتے رہے۔ علی ظفر کا کہنا تھا کہ ‘اس تنازع کے بعد جو دوست تھے ان کا بھی معلوم ہو گیا، لیکن ان کے بارے میں بھی میں اچھی طرح جان گیا جو مجھ سے حسد کرتے تھے، کون میرا دوست تھا اور کون دشمن، ان لوگوں نے اپنے آپ کو خود ایاں کردیا’۔ گلوکار نے بتایا کہ انہیں اس تنازع کے بعد کیریئر میں کافی مالی نقصان ہوا، لیکن ذاتی زندگی میں بہتری ضرور آئی کیوں کہ وہ اب لوگوں کو پہلے سے بہتر انداز میں سمجھنے لگے ہیں۔

علی ظفر نے یہ بھی انکشاف کیا کہ وہ پیپسی بیٹل آف دی بینڈز کے جج بھی بننے والے تھے لیکن ایسا ممکن نہیں ہوسکا جس کی وجہ شاید میشا شفیع ہی تھی۔ خیال رہے کہ میشا شفیع بھی پیپسی بیٹل آف دی بینڈز شو کی جج ہیں۔ می ٹو مہم کے حوالے سے گلوکار کا کہنا تھا کہ ‘می ٹو مہم کی عزت کرتا ہوں لیکن میں اس کے غلط استعمال کی مذمت بھی کرتا ہوں’۔ یاد رہے کہ میشا شفیع نے گزشتہ سال علی ظفر پر جنسی ہراساں کرنے کا الزام عائد کیا تھا، جس کے بعد سے ان دونوں گلوکاروں کے درمیان قانونی جنگ چھڑ گئی تھی جو تاحال عدالتوں میں چل رہی ہے۔ انٹرویو کے دوران علی ظفر نے اپنی فلم ‘طیفا ان ٹربل’ 2018 کی کامیابی پر بھی بات کی، اس فلم میں علی ظفر کے ہمراہ مایا علی نے مرکزی کردار نبھایا تھا۔ اس فلم کی کامیابی کے بعد اس کا سیکوئل بنانے کا اعلان بھی کیا گیا تھا، جس کی کاسٹنگ پر کام جاری ہے۔ فلم میں مرکزی کردار تو علی ظفر خود ہی نبھائیں گے البتہ ہیروئن کے کردار کے لیے اب تک کسی کو کاسٹ نہیں کیا گیا۔ ایک موقع پر شو کے میزبان نے علی ظفر سے پوچھا کہ وہ دوبارہ مایا علی کو فلم میں کاسٹ کرنے کا فیصلہ کررہے ہیں تو اس پر علی ظفر کا کہنا تھا کہ وہ فلم کی کاسٹنگ نہیں کرتے، یہ ہدایت کار احسن رحیم کا کام ہے۔ البتہ علی ظفر نے ماورا حسین کے ساتھ کام کرنے کی خواہش کا بھی اظہار کیا۔ علی ظفر نے ساتھ ساتھ یہ بھی اعلان کیا کہ وہ ‘طیفا ان ٹربل’ کے سیکوئل کے ساتھ ساتھ ایک ہولی وڈ پروجیکٹ پر بھی کام کررہے ہیں، تاہم ابھی اس کے حوالے سے انہوں نے کچھ اور شیئر کرنے سے گریز کیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *