میانمار کی فوج کے جرائم پر اقوام متحدہ کی رپورٹ جاری

جنیوا میں اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کونسل کے دفتر نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ میانمار کی فوج صوبہ راخین میں پانچ لاکھ سے زائد روہنگیا مسلمانوں کے گھروں، زرعی اراضی اور دیہاتوں کو آلگ لگانے کے بعد اب انہیںگھروں کو واپس لوٹنے سے روک رہی ہے۔

ایرانی خبر رساں ادارے کے مطابق میانمار سے بنگلہ دیش جانے والے روہنگیا مسلمانوں میں سے 62 افراد کے بیانات پر مشتمل تیار کی گئی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ روہنگیا مسلمانوں کے خلاف فوج کے حملے 25 اگست کے اس واقعے سے پہلے ہی شروع ہو گئے تھے۔

جس کے بارے میں کہا جا رہا ہے کہ 25 اگست کو روہنگیا مسلمانوں نے میانمار کی سیکیورٹی فورس پر حملہ کیا تھا۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ اطلاعات سے یہ ثابت ہوتا ہے کہ میانمار کی فوج جان بوجھ کر صوبہ راخین میں روہنگیا مسلمانوں کے گھروں، ان کی املاک اور زرعی اراضی کو آگ لگا رہی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *