عید کے بعد نواز شریف کو جیل میں ڈالنے کی مہم شروع ہوگی

اسلام آباد سے کراچی پہنچنے پر میڈیا سے بات کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ حکومت کو پتہ ہے کہ پاناما لیکس کی تحقیقات کے لئے بنائے جانے
والے ٹی او آرز میں وزیراعظم پکڑے جائیں گے اس لئے ٹی او آرز میں ٹال مٹول سے کام لیا جارہا ہے، جب تک قوم ان کے سامنے کھڑے نہیں ہوگی اس وقت
تک ملک کا کوئی مستقبل نہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکمرانوں نے عدلیہ، ایف بی آر، الیکشن کمیشن اور دیگر اداروں میں لوگ خریدے ہوئے ہیں جن کی مدد سے
وہ دھاندلی کر کے اقتدار تک پہنچتے ہیں تاہم ان کا آخری وقت آگیا ہے اور انہیں جیلوں میں ڈالنے تک چین سے نہیں بیٹھیں گے۔
عمران خان کا کہنا تھا کہ کرپشن کے ون نکاتی ایجنڈے پرعید کے بعد تحریک شروع کروں گا جس میں تمام اپوزیشن جماعتوں کو ساتھ ملانے کی کوشش
کررہے ہیں تاہم بلاول بھٹو زرداری تحریک میں ہوں گے یا نہیں یہ کہنا قبل ازوقت ہوگا۔
کراچی آپریشن کے حوالے سے عمران خان کا کہنا تھا کہ کراچی میں سیاسی جماعتوں نے پیسے لے کر پولیس میں بھرتیاں کیں جس کی وجہ سے محکمہ
پولیس کی کارکردگی مایوس کن ہے جب کہ رینجرز شہر قائد میں بہت اچھا کام کر رہی ہے جس کی وجہ سے شہر میں جرائم کی وارداتوں میں واضح کمی
واقع ہوئی۔ انہوں نے کہا کہ سندھ پولیس میں سیاسی مداخلت سے متعلق چیف جسٹس کے ریمارکس درست ہیں جب تک سندھ پولیس میں سیاسی مداخلت ختم
نہیں ہوگی امن ایک ہی خواب رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ کورکمانڈر پشاور نے خیبرپختونخوا پولیس کی کارگردگی کو سراہا ہے کیوں کہ ہم نے کے پی کے
پولیس میں سیاسی مداخلت کا خاتمہ کردیا ہے جب کہ کراچی میں جب تک تھانہ کلچر درست نہیں ہوگا امن بحال نہیں ہوسکتا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *